Slideshow Image 1
Slideshow Image 2
Slideshow Image 3
Slideshow Image 4
Slideshow Image 4

ادارے کے بارے میں عمومی سوالات

  1. ایف آئی اے کیا ہے؟
    ایف آئی اے فیڈرل انویسٹیگیشن ایجنسی کا مخفف ہے۔ یہ ایف آئی اے ایکٹ، 1974(ایکٹ-1975 VIII)مجریہ 1975-10-13کے تحت قائم کیا گیا۔ ایف آئی اے اسمگلنگ، منشیات، کرنسی جرائم، غیر ملکیوں سے متعلق قوانین کے نفاذ، امیگریشن و پاسپورٹ اور بین الاصوبائی اثرات والے جرائم سے عہدہ براء ہونے کے مقصد سے قائم کیا گیاہے۔
  2. ایف آئی اے کا مشن کیا ہے؟
    ایف آئی اے میں مثالی میرٹ کے کلچر کو فروغ دینا، مسلسل پیشہ ورانہ تربیت فراہم کرنا، موثر داخلی احتساب کو یقینی بنانا، ٹیکنالوجی کے استعمال کی حوصلہ افزائی اور ایک بامعنی رائے کے طریقہ کار کو فروغ دینا
  3. ایف آئی اے کا وژن کیا ہے؟
    ایف آئی اے کا وژن ایف آئی اے ایک قانون نافذ کرنے والا ادارہ ہے جو کہ نہ صرف معاشرہ میں اپنی دیانت ، پیشہ ورانہ مہارت اور شفافیت کی وجہ سے ایک منفرد مقام کا حامل ہے، بلکہ دیگر صوبوں کی پولیس کے لیے ایک مثالی حیثیت کا حامل ہے
  4. ایف آئی اے کب قائم ہوا؟
    وفاقی انتظام کے تحت پولیس کا ایک ادارہ سب سے پہلے 1942ء میں جنگ عظیم دوم میں شروع ہوا تاکہ اس وقت کی حکومت ہندوستان کے محکمہ سپلائی اور خریداری میں ہونے والی خوفناک کرپشن کی تحقیقات کی جائیں۔ اس کا نام اسپیشل پولیس اسٹیبلیشمنٹ رکھا گیا۔ پاکستان کے 1947ء میں قیام کے بعد اس کا نام پاکستان اسپیشل پولیس اسٹیبلشمنٹ رکھاگیا۔ جرائم کی تحقیقات کے لئےوفاقی حکومت کے تقاضے بڑھتے جا رہے تھے، اور جناب جی احمد نے "پولیس ریفارمز " پر اپنی رپورٹ 1972-04-07کو کابینہ میں پیش کی جس میں اسمگلنگ ، منشیات ، کرنسی ، جرائم غیر ملکیوں سے متعلق قوانین کے نفاذ اور بین الصوبائی اثرات والے معاملوں سے عہدہ برا ہونے کے لئے ایک وفاقی پولیس کی تنظیم بنانے کی سفارش کی گئی جس کے نتیجے میں ایف آئی اے ایکٹ 1974(ایکٹ1975 VIII)کا اجراء 1975 کو ہوا، جس سے وفاقی ادارہ تحقیقات (فیڈرل انویسٹیگیشن ایجنسی ) قائم ہوئی۔
  5. ایف آئی اے کا سربراہ کون ہے؟
    ایف آئی اے کا سربرہ ڈائریکٹر جنرل گریڈ اکیس 21/بائیس 22 کا بڑا پولیس آفیسر ہوتا ہے۔ جس کے صدر دفاتر اسلام آباد میں ہیں۔ ایف آئی اے کے موجودہ ڈائریکٹر جنرل جناب محمد اکبر خان ہوتی، PSPہیں۔
  6. ایف آئی اے کی نگرانی کون کرتا ہے؟
    وزارتِ داخلہ، حکومت پاکستان، ایف آئی اے کی نگرانی کرتی ہے۔
  7. وفاقی ادارہ تحقیقات(ایف آئی اے) کیا کرتی ہے؟
    ایف آئی اے کا بنیادی کام اسمگلنگ ، مشنیات، کرنسی جرائم، غیر ملکیوں ، امیگریشن و پاسپورٹ اور بین الصوبائی مضمرات والے معاملات سے متعلق قوانین کا نفاذ ہے۔
  8. میں اسمگلنگ ، رشوت خوری، جرائم اور سائبر/الیکٹرنک جرائم کی شکایت کیسے درج کروا سکتا ہوں؟
    ایف آئی اے کی ویب سائیٹ پر شکایات مرکز والے لنک پر کلک کریں اور شکایات فارم میں اپنی شکایت کی تفصیلات ڈالیں۔ شکایت پر فوری عمل شروع ہو جائے گا اور اس کی کیفیت کے متعلق شکایت کنندہ کو مطلع کر دیا جائے گا۔
  9. ایف آئی اے کا انسانی اسمگلنگ روکنے میں کیا کردار ہے؟
    انسانی اسمگلنگ قومی و بین الاقوامی سطح پر ایک سلگتا ہوا مسئلہ ہے۔ اس لیے حکومت اس پر بھرپور توجہ دے رہی ہے۔ انسانی اسمگللنگ کے خلاف کی جانے والی کوششوں کا جائزہ لینے اور نگرانی کےلئے وزارت داخلہ میں ایک اسٹیرئنگ کمیٹی قائم کی گئی ہے۔ جوائنٹ سیکریٹری (سیکیورٹی) وزارتِ داخلہ رابطہ اور معلومات کےلئے اس کے فوکل پوائنٹ مقرر کئے گےہیں۔ بڑی ایجنسی ہونے کے ناطے سے ایف آئ اے صدر دفاتر میں اینٹی ٹریفیکنگ یونٹ کے نام سے ایک شعبہ بنایا گیا ہے۔ جو انسانی اسمگلنگ سے متعلق تمام معاملات پر موثر کاروائی کرے گا۔
  • مورخہ 13 ستمبر 2017

    دواشتہاریوں سمیت 5 انسانی سمگلر گرفتار    مزید پڑھیں

  • مورخہ 30 اگست 2017

    حج پر بھجوانے کا جھانسہ دیکر48لاکھ ہتھیانے واے 2 افراد گرفتار    مزید پڑھیں

  • مورخہ 26 اگست 2017

    اشتہاری سمیت 5 انسانی سمگلر گرفتار    مزید پڑھیں

  • مورخہ 16 اگست 2017

    یونان سے45افراد ایف آئ اےکے حوالے    مزید پڑھیں

  • مورخہ 09 اگست 2017

    جرمنی اور یونان سے18 ہاکستانی ڈیپورٹ    مزید پڑھیں

  • مورخہ 06 اگست 2017

    پاسپورٹ ہٹ ہونے پر مسافرکوروک لیا گیا    مزید پڑھیں

  • مورخہ 02 اگست 2017

    یونان اور جنوبی افریقہ سے 16پاکستانی ڈیپورٹ    مزید پڑھیں

  • مورخہ 16 جولائی 2017

    یونان سے تین پاکستانی ڈیپورٹ    مزید پڑھیں

لیگل

وفاقی تحقیقاتی ادارہ © تمام حقوق محفوظ ہیں۔

DESIGNED BY: NR3C

Privacy Policy

Site Map

رہنمائی اور آرا

ادارے کے بارے میں عمومی سوالات

پتہ : ایف آئی اے ہیڈ کوارٹرز، جی 9/4، اسلام آباد پاکستان۔

ہیلپ لائن:786-345-111

ای میل: complaints@fia.gov.pk