Slideshow Image 1
Slideshow Image 11
Slideshow Image 12
Slideshow Image 2
Slideshow Image 3
Slideshow Image 4
Slideshow Image 5
Slideshow Image 6
Slideshow Image 7
Slideshow Image 8
Slideshow Image 9
Slideshow Image 10

انسداد دہشت گردی ونگ

مینڈیٹ

2003 میں وفاقی حکومت نےایف آئی اے کو انسداد دہشت گردی کردار تفویض کیا۔لہذا سی ٹی ڈبلیو پہلے ایس آئی جی باضابطہ طور پر مئی 2003 میں قائم کیا گیا تھا۔ سی ٹی ڈبلیو کے افسران کو امریکی حکومت کی طرف سے انسداد دہشت گردی کے سلسلے میں معاونت کے لئے سائبر جرائم تجزیہ ، کمپیوٹر فارنسک تجزیہ، سائبر دہشت گردی، دہشت گردوں کی مالی تحقیقات امداد دھماکے سے پہلے دھماکہ خیز مواد کا تجزیہ وغیرہ کے پروگرام پر تربیت اور کچھ سامان فراہم کیا گیا۔

 

سی ٹی ڈبلیو ویژن

انتہائی مطلوبہ دہشت گردوں کی شناخت، گرفتاری، قانونی کاروائی اور خصوصی انسداد دہشت گردی کی تحقیقات کے لئے مثالی مرکز (سینٹر آف ایکسی لینس)

سی ٹی ڈبلیو کے انسدا د دہشت گردی افعال

  1. انتہائی مطلوبہ دہشت گردوں کی شناخت اور گرفتاریاں۔
  2. دہشت گردوں کی مالی/رشوت خور مقدمات کی کھوج اور تحقیقات
  3. اہم دہشت گردی کے واقعات کے دھماکہخیز مواد اور وقوعہ کا تجزیہ
  4. نفرت انگیز مواد کے خلاف قانونی کاروائی، قبضہ اور تحقیقات
  5. کمپیوٹر/موبائل فون کا فارنزک تجزیہ اور سائبر دہشت گردی کی تحقیقات
  6. دہشت گردی کے واقع کا تجزیہ اور خطرے کی تشخیص کی تیار رپورٹ فیڈرل گورنمنٹ کے لئے۔
  7. دہشت گردی کے اداروں کی قومی ڈیٹابیس کی تعمیر
  8. پولیس کے محکموں کےلئے تربیتی نصاب

سائبر تحقیقاتی یونٹ اور کمپیوٹر فارنزک لیب

سی آئی یو پانچ آئی ٹی ماہرین پر مشتمل ہے۔ جن کو سائبر دہشت گردی کی انکوائری/کیس اور کمپیوٹر /موبائل فون کی فارنزک کی اعلیٰ تربیت دی گئی ہے۔ وفاقی حکومت کی طرف سے ایس آئی جی فارنزک کی پہلی باقاعدہ الیکٹرانک فارنزک لیب ہے۔ ایس آئی جی کے آئی ٹی ماہرین کورٹ میں فارنسک ماہرین کے طور پر پیش ہوتے ہیں۔ ایس آئی جی فارنسک ماہرین نے 100سے زیادہ فارنسک تجزیے مختلف پولیس ڈیپارٹمنٹ کے لئے کئے۔ سی آئی یو نے مندرجہ ذیل سافٹ وئیر بھی تیار کئے ہیں۔

  1. دہشت گردوں کی معلومات کا نظام
  2. دہشت گردی کے واقع کا تجزیہ
  3. کیس نگرانی کا نظام
  4. پرسنل ریکارڈ ڈیٹا بیس
  5. انسانی اسمگلر کی معلومات کا نظام

دہشت گردوں کے مالی تحقیقاتی یونٹ

ٹی ایف ائی یو نے انٹر پول ، ایف ایم یو اور بین الاقوامی شراکت داروں کی درخواست پر اب تک 161انکوائریاں رجسٹر کی ہیں۔ اس نے تحقیقات اور کورٹ میں قانونی کاروائی میں سہولت فراہم کی ۔ فنانشل تفتیشی آفیسروں کو تربیت بھی فراہم کی اور ٹی ایف تحقیقات کے لئے ایس او پی بھی بنائے۔ ایف آئی ای نے فنانشل مانیٹرنگ یونٹ (ایف آئی یو/ایف آئی ایم) اسٹیٹ بینک آف پاکستان، کمرشل بنک اور فنانشل اداروں سے روابط بھی قائم کئے۔ دہشتگردوں کی فنانسگ کے متعلق قواعد و ضوابط کے نفاذ کی مانیٹرنگ اور تجزیہ بھی کیا۔ ٹی ایف آئی یو نے مختلف نیشنل اور انٹرنیشنل فورم میں(ایف آئی اے/ایس آئی جی) کی نمائندگی بھی کی، جن کا انعقاد رشوت خوری اور دہشتگروں ی فناسنگ کے بارے میں تھا۔

 

CTW کی طرف سے تحقیقات اہم دہشت گردی کے مقدمات

  1. کیس ایف آئی آر نمبر219مورخہ 08-06-06راولپنڈی (خود کش دھماکے کی کوشش کمپ آفس راولپنڈی)
  2. کیس ایف آئی آر نمبر 08/09مورخہ 08-06-19دھماکہ خیز مواد ایکٹ ایف آئی اے کرائم سرکل لاہور۔
  3. کیس ایف آئی ار نمبر08/10ایف آئی اے سرکل کرائم راولپنڈی
  4. JIT SIG تحقیقات میریٹ بم دھماکہ کا حصہ ہے(کیس ایف آئی آر نمبر 08/127مورخہ 08-09-20)پولیس اسٹیشن: سیکٹریٹ ، اسلام آباد۔
  5. کیس ایف آئی آر نمبرSiu/FIA 01/09ممبئی دھماکے۔ فائنل رپورٹ۔ اے ٹی سی راولپنڈی میں جمع کراوائی۔
  6. ڈائریکٹر ایس آئی جی نے وفاقی حکومت کی طرف سے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی جو بینظیر بھٹو کیس راولپنڈی کی تحقیقات کرے گی۔
 

شائع کتابیں

  1. سائبر دہشت گردی کی کتاب۔
  2. دھماکہ خیز مواد ، بم اور ائی ای ڈیز کی کتاب۔
  3. دہشتگردوں کی فنانس تحقیقات کی کتاب۔

CTWسی ٹی ڈبلیو کی خصوصی معلومات کا ذخیرہ

سی ٹی ڈبلیو ڈیٹا بیس ایس آئی جی کے تمام دفتری کاغذات، ایپلی کیشنز/ڈیٹا بیسس کےلنکس حوالہ جات کے ساتھ بنایا گیا ہے۔ تمام ایس آئی جی کے دفاتر وائیڈ ایریا نیٹ ورک سے مربوط ہیں۔ دہشتگردوں کا ڈیٹا، مشتبہ دہشت گرد اداروں، دہشت گردوی واقعات کا تجزیہ اور خطرہ جائزہ رپورٹ وغیرہ دہشت گردی کے معلومات کے نؐام میں محفوظ /ذخیرہ ہے۔

  • مورخہ 16 فروری 2017

    مسلح افواج کے نام پر255جعلی سوشل میڈیا اکاونٹس کا انکشاف    مزید پڑھیں

  • مورخہ 15 فروری 2017

    دو گیٹ وے ایکسچینج پکڑی گۂیں    مزید پڑھیں

  • مورخہ 09 فروری 2017

    ایف آئی آے کا نجی ٹریولز ایجنسی پرچھاپہ    مزید پڑھیں

  • مورخہ 06 فروری 2017

    کشتی حادثہ:سرگودھا سے بھی ایک ایجٹ گرفتار    مزید پڑھیں

  • مورخہ 05 فروری 2017

    چارانسانی اسمگلر گرفتار کر لۓ    مزید پڑھیں

  • مورخہ 01 فروری 2017

    ترکی سے ڈی پورٹ ہونے والے 34 افراد گرفتار    مزید پڑھیں

  • مورخہ 30 جنوری 2017

    فحش وڈیو بنانے،انٹرنیٹ پر ڈالنےمیں پنجاب سرفہرست    مزید پڑھیں

  • مورخہ 28 جنوری 2017

    بلیک لسٹ پاسپورٹ پر سفر کی کوشش،مسافرآف لوڈ    مزید پڑھیں